You are currently viewing کراچی میں پولیس چوکیوں کی فروخت کا سنسی خیر انکشاف

کراچی میں پولیس چوکیوں کی فروخت کا سنسی خیر انکشاف

کراچی(اسٹاف رپورٹر) کراچی میں پولیس کی چوکیاں فروخت کیئے جانے کا انکشاف سامنے آگیا۔ چوکیوں کی فروخت سے پولیس افسران کی چاندی ہوگئی۔ تفصیلات کے مطابق تھانوں پر سرکاری رنگ روغن، جدید اسلحہ، نہ موبائلوں کی مینٹیننس۔ سندھ پولیس کا بجٹ آخر جاتا کہاں ہے۔

ذرائع کے مطابق رنگ ساز کمپنیوں نے اپنی تشہیر کے لیے تمام چوکیاں اور تھانے کی دیواریں خرید لیں۔تھانے کی چوکیوں اور دیواروں پر اشتہار لگانے سے قومی خزانے کو بھی ریوینیو کی مد میں کروڑوں کا نقصان پہنچایا جارہا ہے۔ پولیس چوکی ماہانہ 20 ہزار ڈی ایس پی، 25ہزار ایس ایچ او اور 5 ہزار ہیڈ محرر کو کما کر دے رہی ہیں۔

تھانوں کی بیرونی دیوار اور سائن بورڈ پر اشتہار کی مد میں معاوضہ الگ دیا جاتا ہے۔ چوکیاں صبح پنکچر اور ہوٹل کا کام اور شام میں شہریوں کو لوٹنے کا کام انجام دے رہی ہیں۔ کراچی کے شہریوں کا کہنا ہے کہ سرکاری چائنہ کٹنگ کر کے عوام کو جگہ جگہ لوٹا جا رہا ہے۔

تاہم شہروں کا کہنا ہے کہ شام ہوتے ہی موٹرسائیکل سواروں کو ان چوکیوں پر روکا جاتا ہے۔ جبکہ پولیس چوکیوں کے خریداروں میں پنکچر والے،چائے والے، گملے والے اور جوس والے سرفہرست ہیں۔

نیوز پاکستان

Exclusive Information 24/7