You are currently viewing مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کے خلاف امریکا بھی خاموش نہ رہ سکا

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کے خلاف امریکا بھی خاموش نہ رہ سکا

  • Post author:
  • Post category:دنیا
  • Post last modified:30/07/2016 14:38
  • Reading time:1 mins read

واشنگٹن(ڈیسک) بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کے مظلوم عوام پربے جا ظلم اور پیلٹ گن کا استعمال پر امریکا نے تشویش کا اظہار کردیا۔

تفصیلات کے مطابق واشنگٹن میں پریس بریفنگ دیتے ہوئے ترجمان امریکی محکمہ خارجہ جان کربی نےکہا کہ “کشمیر کے معاملے پر تمام فریقین کو آپس میں مذاکرات کرنے چاہیےجبکہ  مقبوضہ کشمیر کی موجودہ صورتحال پر صرف بات چیت کے ذریعے قابو پایا جاسکتا ہے”۔

جان کربی کا  مزید کہنا تھا کہ بھارت میں گوشت کھانے کے معاملے پر ہونے والی ہلاکتیں قابل تشیویش ہیں جبکہ  تمام ممالک اقلیتیوں کی مذہبی آزادی کو یقینی بنائیں اور بھارتی حکومت اپنے ملک میں بڑھتی ہوئی انسا نی حقوق کی خلاف ورزیوں پر نوٹس لے اور ان مظالم کو ختم کروائے۔

جان کربی کا یہ بھی کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیرکی عام عوام پر بھارتی افواج کی جانب سے پیلٹ گن کا استعمال قابل تشیوش ہے امریکا مظاہرین پر اس طرح کے ہتھیار استعمال کرنے کی کسی صورت اجازت نہیں دے سکتا۔

ایک سوال کے جواب میں جان کربی نے کہافتح اللہ گولن کو ترکی کے حوالے کرنے پر کوئی تبصرہ نہیں کرویں  گےجبکہ فتح اللہ گولن کا  معاملہ امریکی محمکہ انصاف طے کرے گاجبکہ جان کربی نے  نے واضح طور پر بتایا کہ ترکی میں ہونے والی فوجی بغاوت کے پیچھے امریکا کوئی ہاتھ نہیں تھا۔

پاکستان سے افغان مہاجرین کی واپسی کے حوالے پر بات کرتے ہوئے جان کربی کا کہنا تھا کہ مہاجرین کی واپسی پر پاکستان سے مکمل رابطے میں ہیں جبکہ  افغان مہاجرین کو واپس بھیجنے کا فیصلہ پاکستان کا اندرونی مسئلہ ہے۔