You are currently viewing کراچی کی طرح گلگت بلتستان میں بھی مہنگے فروٹس کی بائیکاٹ مہم شروع

کراچی کی طرح گلگت بلتستان میں بھی مہنگے فروٹس کی بائیکاٹ مہم شروع

گلگت (ڈیسک) کراچی کی طرح گلگت بلتستان کے شہریوں نے بھی مہنگے فروٹس کی بائیکاٹ مہم کا آغاز کر دیا۔
رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں گراں فروشوں کی من مانیوں کو لگام دینے کے لیے کراچی میں سوشل میڈیا پر مہنگے پھلوں کی بائیکاٹ مہم شروع کی گئی ۔ شہریوں نے اپیل کی کہ مہنگے فروٹ بیچنے والوں کا بائیکاٹ کیا جائے اور کچھ دنوں تک بغیر فروٹ کے روزہ افطار کیا جائے تا کہ پھلوں کے ریٹ آسمان پرپہنچانے والوں کی عقل ٹھکانے آ سکے۔
اس مہم کی دیکھا دیکھی گلگت بلتستان میں بھی شہریوں نے مہنگے پھل بیچنے والوں کا بائیکاٹ شروع کر دیا، شہریوں نے سوشل میڈیا کے ذریعے صارفین سے درخواست کی کہ 27مارچ سے 31مارچ تک پھلوں کی خریداری بالکل بند کر دی جائے یا محدود پھل خریدے جائیں تا کہ پھلوں کی قیمتیں عام شہریوں کی دسترس میں آ سکیں۔
گراں فروش ضلعی انتظامیہ کے جاری کردہ نرخ نامے کو ہوا میں اڑاتے ہوئے اپنی مرضی کے ریٹ نافذ کر کے پھل فروخت کرنے میں مصروف ہیں، رمضان سے قبل جو خربوزہ 70روپے کلو دستیاب تھا وہ اب 200روپے کلو تک پہنچ چکا ہے۔ اسی طرح اسٹرابیری 250سے 400روپے کلو کر دی گئی، جو کیلا رمضان سے پہلے 200روپے درجن تھا اب 550روپے تک چلا گیا ہے، سیب 200سے 450روپے فروخت کیا جا رہا ہے۔