You are currently viewing ڈیفنس کراچی میں پولیس اہلکار کا قتل، ملزم کی گرفتاری کے لیے چھاپے

ڈیفنس کراچی میں پولیس اہلکار کا قتل، ملزم کی گرفتاری کے لیے چھاپے

کراچی (ڈیسک) کراچی کے علاقے ڈیفنس میں گزشتہ رات پولیس اہلکار کو قتل کر دیا گیا۔ جائے وقوع کے قریب لگے کیمروں اور سامنے آنے والی وڈیو سے ملزم کی شناخت کر لی گئی ۔ ملزم موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گا، پولیس ملزم کی گرفتاری کے لیے چھاپے مار رہی ہے۔ فوٹیج کی مدد سے گاڑی کا نمبر اور ملزم کی رہائش گاہ کا پتہ چلا لیا گیا ، گاڑی بھی برآمد ہو گئی۔ گاڑی پر گولی لگنے کا نشان موجود ہے۔
تفصیلات کے مطابق ڈیفنس کے علاقے فیز فائیو مزار عبداللہ شاہ غازی کے قریب گزشتہ رات واقعہ پیش آیا۔ واقعے سے متعلق پولیس اہلکار اور ملزم کی تلخ کلامی کی وڈیو بھی منظر عام پر آ چکی ہے جس میں ملزم نے اپنا اسلحہ نکالا ہوا ہے۔
توحید کمرشل کے قریب پولیس اہلکار عبدالرحمن نے ایک سیاہ رنگ کی گاڑی کو روکنے کی کوشش کی، اہلکار نے ملزم کو گاڑی کی چیکنگ کا کہا جس پر تلخ کلامی شروع ہو گئی، ملزم نے اپنی پستول نکال لی ۔ پولیس اہلکار نے ملزم کو تھانے چلنے کا کہا ۔ ملزم نے کہا کہ میں تمھارے ساتھ تھانے نہیںجائوں گا ، جہاں بھی جائوں گا خود جائوں گا اور گاڑی میں بیٹھ کر فرار ہو گیا۔
پولیس اہلکار نے اس کا تعاقب کیا جس پر ملزم نے فائرنگ کر دی جو پولیس اہلکار کے سرکے پاس لگی ، جواباً پولیس اہلکار نے بھی گاڑی پر فائرنگ کی ۔ ملزم کی فائرنگ سے لگنے والی گولی سے پولیس اہلکار جانبر نہ ہو سکا اور خالق حقیقی سے جا ملا۔
مقتول پولیس اہلکار کا تعلق بونیر سے بتایا جاتا ہے۔ مقتول کے گھر والوں کےمطابق اس کا نکاح ہو چکا تھا، اگلے ماہ شادی تھی جس کی تیاریاں چل رہی تھیں۔ مقتول نے شادی کے لیے ایک کمرہ تیار کرا رکھا تھا ۔ پولیس اہلکار عبدالرحمن سٹی ریلوے اسٹیشن کالونی میں رہائش پذیر تھا اور چار بھائیوںمیں اس کا نمبر تیسرا تھا۔ پولیس ڈپارٹمنٹ میں شاہین فورس میں عبدالرحمن کی ڈیوٹی تھی۔