You are currently viewing پرویزالٰہی کی ایک ماہ کیلئے نظربندی کا نوٹیفکیشن جاری، احکامات چیلنج کر دیے

پرویزالٰہی کی ایک ماہ کیلئے نظربندی کا نوٹیفکیشن جاری، احکامات چیلنج کر دیے

لاہور (ڈیسک)تحریک انصاف کے صدر و سابق وزیر اعلی پنجاب چوہدری پرویز الٰہی کو ایک ماہ کیلئے نظر بند کر دیا گیا۔
ڈپٹی کمشنر لاہور کی جانب سے نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیاہے۔
چوہدری پرویز الٰہی کی نظر بندی کے لیے سی سی پی او لاہور نے ڈپٹی کمشنر کو مراسلہ لکھا تھا جس میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ چوہدری پرویز الٰہی پی ٹی آئی کے سرکردہ رہنما اور صدر ہیں، ان سے امن و امان کو نقصان ہو سکتا ہے، استدعا ہے کہ انہیں ایک ماہ کے لیے نظر بند کیا جائے۔
ڈی سی لاہور کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق چوہدری پرویز الٰہی کو تھری ایم پی او کے تحت ایک ماہ کیلئے نظربند کیا گیا ہے۔
نوٹیفکیشن کے مطابق پرویز الٰہی آئندہ ایک ماہ کیمپ جیل میں رہیں گے۔
سابق وزیر اعلی پنجاب چوہدری پرویز الٰہی کے خلاف تین مقدمات درج ہیں اور وہ پہلے ہی لاہور کی ڈسٹرکٹ کیمپ جیل میں جوڈیشل ریمانڈ پر ہیں۔
نظر بندی کے نوٹیفکیشن میں تھانہ قلعہ گجر سنگھ میں 2، غالب مارکیٹ میں درج ایک مقدمے کا ذکر کیا گیا ہے اور بتایا گیا ہے کہ چوہدری پرویز الٰہی ان کیسز میں پولیس کو مطلوب بھی ہیں۔
سابق وزیر اعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی نے اپنی نظربندی کے احکامات کو لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کردیا ہے۔
چوہدری پرویز الٰہی کی جانب سے عامر سعید راں ایڈووکیٹ نے لاہور ہائیکورٹ میں دائر درخواست میں ڈی سی لاہور سمیت دیگر کو فریق بنایا ہے اور موقف اختیار کیاہے کہ پرویز الٰہی کو سیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے۔
استدعا میںکہا گیا کہ پرویز الٰہی کی تمام مقدمات میں ضمانت منظور ہو چکی ہے، عدالت دہشت گردی کے مقدمے میں بھی پرویز الٰہی کو حفاظتی ضمانت دے چکی ہے۔