You are currently viewing پاکستان ہر حال میں تاپی گیس منصوبہ مکمل کرنے کیلئے پرعزم ہے، نگران وزیر اعظم

پاکستان ہر حال میں تاپی گیس منصوبہ مکمل کرنے کیلئے پرعزم ہے، نگران وزیر اعظم

تاشقند (ڈیسک) نگراں وزیر اعظم انوار الحق کاکڑ نے کہا ہے کہ بھارت کی عدم توجہی کے باوجود پاکستان اپنی اور خطے کی توانائی کی ضروریات کو پورا کرنے کیلئے تاپی گیس پائپ لائن منصوبہ مکمل کرنے کے لئے پرعزم ہے۔
تاشقند میں اقتصادی تعاون تنظیم کے16ویں سربراہی اجلاس کے موقع پر خبر رساں ادارے اناطولیہ کو خصوصی انٹرویو میں انہوں نے کہاکہ پاک بھارت تعلقات کو معمول پر لانے کے لئے مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل کرناہو گا۔
نگران وزیر اعظم نے غزہ میں ہونے والی تباہی کے اثرات خطے اور اس سے باہر تک پھیلنے کے نتائج سے خبردار کرتے ہوئے وہاں فوری جنگ بندی پرزور دیا۔
انھوں نے کہا کہ خطے میں ایک کھلا انسانی المیہ نظر ارہا ہے اور اس کا اثر نہ صرف خطے میں بلکہ شاید خطے سے باہر بھی پڑے گا، انہوں نے غزہ میں جنگ کے “فوری” خاتمے پر زور دیا، وزیراعظم نے خوراک، ادویات اور دیگر ضروری اشیا کی بلا تعطل فراہمی کے لیے انسانی راہداری کے قیام کا مطالبہ بھی کیا۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان اسلامی تعاون تنظیم (او آئی سی)کے آئندہ خصوصی اجلاس میں شرکت کا منتظر ہے، او آئی سی کوغزہ کی صورت حال پر غور کرنا چاہیے، اور اجتماعی ردعمل ظاہر کرنا چاہیے ،بغیر دستاویزات مقیم افغان مہاجرین کو واپس بھیجنے کے پاکستان کے اقدام کا دفاع کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان کے ملک نے یہ فیصلہ تھوڑی تاخیر سے کیا، لیکن ہم سرحد پرآمد و رفت کو منظم کرنے کے لیے بہت زیادہ پرعزم ہیں۔
انہوں نے کہاکہ دنیا میں کہیں بھی اور کسی بھی ملک کی طرف سے غیر قانونی امیگریشن کی حوصلہ افزائی نہیں کی گئی ہے تو پاکستان کے ساتھ خصوصی طور پر یہ سلوک کیوں کیا جاتا ہے کہ وہ غیر دستاویزی افغان شہریوں کے ساتھ بصورت دیگر سلوک کرے۔ہر ملک دوسرے ممالک کے شہریوں کی منظم آ مدورفت چاہتا ہے۔طویل مدت میں یہ افغان شہریوں اور پاکستانیوں کے بہترین مفاد میں ہو گا کہ باقی دنیا کی طرح معمول کے مطابق منظم آمدورفت ہو۔