You are currently viewing مہنگی بجلی، ٹیکسز، بھاری بلوں کیخلاف ملک بھر میں احتجاج کا دائرہ وسیع

مہنگی بجلی، ٹیکسز، بھاری بلوں کیخلاف ملک بھر میں احتجاج کا دائرہ وسیع

لاہور، اسلام آباد، کراچی (ڈیسک) مہنگی بجلی، ٹیکسز اور بھاری بلوں کے خلاف ملک کے طول و عرض میں احتجاج کا سلسلہ جاری ہے۔
راولپنڈی کے علاقے بکرا منڈی پر عوام کی بڑی تعداد جمع ہو گئی اور آئیسکو گرڈ اسٹیشن کا گھیراؤ کر لیا ، موقع پر موجود سینکڑوں شہریوں نے بجلی کے بل جلا ڈالے۔
لوگوں نے بجلی کے بلوں اور مہنگائی کو نشانہ بناتے ہوئے حکومت کیخلاف شدید نعرے بازی کی، عوام کا کہنا تھا کہ بل جمع نہیں کروائیں گے ۔
مظاہرین کا کہنا تھا کہ بلوں میں بے تحاشا ٹیکس لگا کر ہمارے جسموں سے خون نچوڑا جا رہا ہے، سرکاری ملازمین اور اشرافیہ کو مفت بجلی فراہم کی جاتی ہے جب کہ غریب طبقے کو مہنگی ترین بجلی فروخت کی جا رہی ہے۔ انھوں نے کہا کہ وہ بجلی کاٹنے دینگے نہ ہی بل ادا کریں گے۔احتجاج کے باعث ٹریفک بلاک ہوگیا اور گاڑیوں کی طویل قطاریں لگ گئیں گئی۔
بالاکوٹ میں انجمن تاجران کی کال پر شٹر ڈاؤن ہڑتال کی گئی، تاجر برادری نے بجلی بلز میں اضافہ مسترد کر دیا۔ انھوں نے بلوں میں ٹیکسز کی بھرمار اور مہنگائی کے خلاف ریلی بھی نکالی گئی۔
ادھر مانسہرہ میں بھی انجمن تاجران کی کال پر مکمل شٹر ڈاؤن اور کاروباری مراکز بند رکھے گئے، لوگوں کی کثیر تعداد احتجاج کے لیے مرکزی چوک پر موجود رہی جس کے بعد واپڈا دفتر تک ریلی کی صورت میں احتجاج و دھرنا دیا گیا۔
کامرہ میں بجلی بلوں کے خلاف احتجاجی مظاہرہ ہوا، مظاہرین اعلان کیا کہ وہ ظالمانہ ٹیکس کے خلاف ہیں، بل جمع نہیں کروائیں گے، انھوں نے سول نافرمانی کے نعرے بھی لگائے۔