Connect with us

پاکستان

منی بجٹ 23 جنوری کو پیش کیا جائے گا، وفاقی وزیر خزانہ

کراچی (ڈیسک)وفاقی وزیرخزانہ اسد عمر کا کہنا ہے کہ23 جنوری  کو منی بجٹ  پیش کیا جائے گا ۔

وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری پہنچنے پر کراچی چیمبر کے ممبران اور بزنس مین گروپ چئیرمین سراج قاس تیلی سے ملاقات کی۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے وزیرخزانہ اسد عمر نے کہا کہ ہمیں علم ہے کہ ماضی میں قلم کی ایک جنبش سے ہر روز کیا کیا کام کیا گیا ہے، بغیر کسی چیک بیلنس کے کوئی اختیار ہو تو وہ اختیار نقصان دہ ہوگا، ایف بی آر کے سیچوریٹری ریگولیٹری آرڈرز (ایس آر او) کے اجراء کا اختیار ختم کردیا گیا ہے۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت 23 جنوری کو منی بجٹ پیش کرے گی، منی بجٹ میں ٹیکس انامیلز کو دور کیا جائے گا اور ٹیکسوں کے حوالے سے ہر قسم کی تبدیلی پارلیمنٹ کی منظوری سے ہوگی، منی بجٹ کے حوالے سے کراچی چیمبراگلے ہفتے اپنی ٹیم اسلام آباد بھیجے۔

وزیرخزانہ نے کہا کہ 23 جنوری کو آنے والے فنانس بل میں کاروبار آسان بنانے کے اقدامات بروئے کار لائے جارہے ہیں، منی بجٹ میں کھپت کو کم اورسرمایا کاری بڑھانے کے اقدامات ہوں گے، سرمایہ کاری کے ساتھ ساتھ سیونگ کو بھی بڑھانا ہے، پاکستان میں مقامی بچت اورسرمایہ کاری کم ترین سطح تک آگئی ہے، سرمایہ کاری ہوگی تو معیشت آگے بڑھے گی اورروزگار پیدا ہوگا، جب کہ تحریک انصاف کے منشور میں شامل ہے کہ کاروبار میں سہولتیں فراہم کی جائیں گی۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ جنوبی ایشیاء میں علاقائی تجارت نہ ہونے کے برابر ہے، خطے میں پاکستان کی تجارت کو بڑھایا جائے گا، درآمدات کی بنیاد پر کھپت پر قابو پایا جائے گا ، کھپت کی بنیاد پر معیشت چلانے سے تجارتی خسارہ خطرناک حد تک بڑھ گیا ہے جب کہ کاروبار میں آسانی ہیدا کرنے کے لیے ہرماہ وزیراعظم کی صدارت میں اجلاس منعقد کیا جاتا ہے۔

اسد عمر نے کہا کہ وزیراعظم نے بھارت سے مسائل پر بات چیت کیلیے ہاتھ بڑھایا لیکن افسوس کی بات ہے کہ بھارت نے پاکستان کے پیغام کا مثبت جواب نہیں دیا جب کہ ترکی میں عوامی سطح پر پاکستان کیلیے خیرسگالی کا جذبہ ہے لیکن دونوں ملکوں میں تجارت اتنی نہیں، البتہ ترکی سے تجارتی وفود کے تبادلے پر بات چیت ہوئی ہے۔

دوسری جانب بزنس مین گروپ چئیرمین سراج قاس تیلی کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت آئین کے آرٹیکل 158 پر عملدرآمد کو یقینی بنائے اور سندھ سے نکلنے والی گیس سے پہلے سندھ کی ضروریات کو پورا کیا جائے

اس کا اشتراک:

پاکستان

بلاول کو پیغام دیا ہے کہ بھٹو بنیں زرداری نہ بنیں، شیخ رشید

-->

لاہور (ڈیسک)وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید کا کہنا ہے کہ بلاول کو پیغام دیا ہے کہ بھٹو بنیں زرداری نہ بنیں اور عمران خان کی حکومت میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ بھی پاکستان کا دورہ کریں گے، جبکہ شہباز شریف نے حکومت سے این آر او مانگا ہے۔

لاہور میں پریس کانفرنس کے دوران وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہا کہ رواں سال ملک میں 20ٹرینوں کااضافہ کریں گے،  نجی شعبےکےتعاون سےمزید2فریٹ ٹرینیں تیارکررہےہیں، فریٹ ٹرینیں آگئیں توریلوےترقی کرےگا، اس کے علاوہ 7 بڑےریلوے اسٹیشنزکی تعمیرنو بھی کرنے جارہے ہیں۔ وفاقی وزیر نے کہا میں امریکی صدرڈونلڈٹرمپ کو مستقبل میں پاکستان کادورہ کرتےدیکھ رہاہوں، امریکا  کوافغان مسئلے پر عمران خان کا سیاسی تجزیہ سمجھ آگیا ہے، ہم آئی ایم ایف کی شرائط نہیں مان رہے بلکہ وہ شرائط مان رہےہیں جوملکی مفادمیں ہو۔

شیخ رشید نے کہا مجھے بلاول کی فکر ہے کہ اس کے ساتھ کیا ہوگا، بلاول کوسیاست کرنی ہےتووہ بھٹوبنیں، زرداری نہ بنیں، آصف زرداری نےبےنظیرکی موت کاسیاسی فائدہ اٹھایا،  زرداری نے بےنظیرکی وصیت کواپنےمقصدکیلیےاستعمال کیا، اس وقت ملک میں جو صورتحال ہے اس کے ذمے دارنوازشریف اور زرداری ہیں۔

وزیر ریلوے نے کہا شہبازشریف جتنا مرضی کوشش کرلیں انہیں این آر او نہیں ملے گا، حلف اٹھاتا ہوں کہ میں جھوٹ نہیں بولتا چاہے وزیر رہوں یا نہ رہوں، میرا پبلک اکاؤنٹس کمیٹی میں جانا لازمی ہے۔ میں نےپی اے سی کی رکنیت کیلیےباقاعدہ درخواست دی ہے، آئین اورقانون کےتحت کوئی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کارکن بننےسےنہیں روک سکتا، یہ کہتے تھے اگلی اسمبلی میں شیخ رشید نہیں ہوگا میں ہوں اور آرہا ہوں پی اے سی میں۔ شیخ رشید نے کہا  شہبازشریف باقی معاملات کا آڈٹ کریں، میں ان کےمعاملات کا آڈٹ کروں گا، تحریک انصاف اپنے کس رکن کا نام واپس لیتی ہے یہ ان کا مسئلہ ہے میں اس وقت پارلیمنٹ میں سب سے زیادہ سینئر اور تجربہ کار ہوں۔

متعلقہ اشاعت

Continue Reading

پاکستان

ساہیوال میں پولیس کی فائرنگ سے 2 خواتین سمیت 4 افراد جاں بحق، 3 بچے زخمی

-->

ساہیوال (ڈیسک)قادرآباد کے قریب پولیس کے محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) کی فائرنگ سے 2 خواتین سمیت 4 افراد ہلاک اور 3 بچے زخمی ہوگئے۔

ساہیوال میں سی ٹی ڈی کی کارروائی میں 4 افراد جاں بحق اور 3 بچے زخمی ہوگئے۔ جاں بحق افراد میں 2 خواتین شامل ہیں۔

سی ٹی ڈی نے چاروں جاں بحق افراد کو اغوا کار قرار دیتے ہوئے دعویٰ کیا کہ پولیس نے ایک آلٹو گاڑی کو رکنے کا اشارہ کیا تو کار سوار افراد نے فائرنگ کردی۔ پولیس کی جوابی فائرنگ سے چاروں افراد ہلاک ہوگئے تاہم حیران کن طور پر کوئی پولیس اہلکار زخمی نہیں ہوا۔

پولیس نے کہا کہ اغوا کاروں کے قبضے سے تین بچے بازیاب کرالیے گئے جو گاڑی کی ڈگی میں موجود تھے۔ تاہم صورت حال اس وقت یکسر تبدیل ہوگئی جب لاشوں اور زخمی بچوں کو ڈی ایچ کیو اسپتال منتقل کیا گیا جہاں زخمیوں کو طبی امداد فراہم کی گئی۔ جب بچوں کا بیان قلمبند کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ جاں بحق افراد ان کے والد، والدہ، خالہ اور ڈرائیور ہیں۔ وہ لوگ لاہور سے بورے والا جارہے تھے کہ راستے میں پولیس نے ان کی گاڑی پر فائرنگ کی۔

عینی شاہدین نے بتایا کہ پولیس نے نہ گاڑی روکی اور نہ تلاشی لی بلکہ سیدھی فائرنگ کردی جبکہ گاڑی سے بھی کوئی اسلحہ برآمد نہیں ہوا۔

مقامی تھانہ یوسف والا پولیس نے ہلاک شدگان کی شناخت سے لاعلمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ کارروائی سی ٹی ڈی کی جانب سے کی گئی ہے۔ میڈیا نمائندگی جب جائے وقوعہ پر پہنچے تو پولیس نے لاشیں ہٹادیں تھیں اور مبینہ طور پر ثبوت بھی مٹانے کی کوشش کی۔

Continue Reading

پاکستان

چوہدری برادران کے ساتھ معاملات حل ہوگئے ہیں، فیاض الحسن چوہان

-->

لاہور (ڈیسک) وزیراطلاعات پنجاب فیاض چوہان نے دعویٰ کیا ہےکہ چوہدری برادران کے ساتھ معاملات حل ہوگئے ہیں۔

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فیض الحسن چوہان نے کہا کہ چوہدری پرویز الٰہی اور عثمان بزدار کی ملاقات ہوئی ہے اور مسئلہ حل ہوچکا ہے، چوہدری برادران کو علم ہےکہ کون ان کا دوست اور کون دشمن ہے۔

انہوں نے کہا کہ چوہدری برادران سب سے زیادہ ذہین اور زیرک سیاستدان ہیں، مخالفین کی خواہش پوری نہیں ہوگی، چوہدری برادران اس نظام کے اہم پلرز ہیں۔

صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھاکہ عمار یاسر کا معاملہ وزیراعلیٰ پنجاب سے متعلق نہیں، وہ وزیراعلیٰ پنجاب سے خود بات کرلیتے تو مسئلہ حل ہوجاتا ، عمار یاسر ہمارے ساتھی ہیں اور ہمارے ساتھ ہی رہیں گے۔

واضح رہےکہ تحریک انصاف کی اتحادی جماعت مسلم لیگ (ق) کے رہنما اور پنجاب کے وزیر معدنیات عمار یاسر نے اپنے کام میں مداخلت کا شکوہ کرکے وزارت سے استعفیٰ دیا تھا جب کہ چوہدری برادران کی جانب سے بھی حکومتی رویے اور معاہدے پر تحفظات کی اطلاعات تھیں۔

Continue Reading
/

Facebook

آج کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں