You are currently viewing ملکی زرمبادلہ ذخائر خطرناک حد تک کم ہو گئے

ملکی زرمبادلہ ذخائر خطرناک حد تک کم ہو گئے

اسلام آباد (ڈیسک) رواں ماہ پاکستان کے زرمبادلہ ذخائر خطرناک حد تک کم ہو گئے ہیں۔
ملکی زرمبادلہ ذخائر میں مسلسل واقع ہو رہی ہے ، اس وقت پاکستان کے زرمبادلہ ذخائر گزشتہ 9سال کی کم ترین سطح پر آ چکے ہیں۔
ذرائع کے مطابق اماراتی بینکوں کو قرض واپس کرنے کی مد میں ایک ارب 2کروڑ ڈالر کی ادائیگیاں کی گئی ہیں جس کے بعد پاکستان کے پاس 4.5ارب ڈالر رہ گئے ہیں۔
اپریل 2022سے اب تک پاکستان کے زرمبادلہ ذخائر میں 6.35ارب ڈالر کی کمی واقع ہو چکی ہے جو کسی بھی ملک کی معیشت کے لیے اچھا شگون نہیں ہے۔
اسٹیٹ بینک کے ذرائع کا کہنا ہے کہ پاکستان کے پاس موجود ڈالر کے ذخائر محض 25دن کی ملکی ضروریات کے لیے کافی ہیں۔
اس وقت پاکستان کو فوری طور پر فنڈز کی ضرورت ہے، وزیر اعظم شہباز شریف جنیوا کانفرنس میں شرکت کے لیے جا رہے ہیں جہاں ان کی کوشش ہو گی کہ ڈیڑھ ارب ڈالر کا بندوبست کیا جا سکے۔