You are currently viewing لاہور ہائیکورٹ: عمران خان کی گرفتاری کیلئے آپریشن صبح 10 بجے تک روکنے کا حکم

لاہور ہائیکورٹ: عمران خان کی گرفتاری کیلئے آپریشن صبح 10 بجے تک روکنے کا حکم

لاہور (ڈیسک) لاہور ہائیکورٹ نے عمران خان کی گرفتاری کے لیے پولیس آپریشن صبح 10 بجے تک روکنے کا حکم دے دیا۔
لاہور ہائیکورٹ میں زمان پارک آپریشن کے خلاف دائر درخواست کی سماعت جسٹس طارق سلیم نے کی۔
دوران سماعت شاہ محمود قریشی نے کہا کہ اگر گرفتاریاں بند کردیں سب ٹھیک ہوجائے گا جس پر جسٹس طارق سلیم شیخ نے کہا کہ وہ گرفتاریاں نہیں روک سکتے۔
آئی جی پنجاب نے عدالت کو بتایا کہ پیٹرول بم سے ہماری گاڑیاں جلادی گئیں، رینجرز کی گاڑیوں پر پیٹرول گرایا گیا، ساری گرین بیلٹ خراب کردی، سرکاری چیزیں برباد کردیں، عدالت وارنٹ ختم کردیتی ہم واپس آجاتے، جنہوں نےخرابی کی ہے انہیں پکڑنا ہے ہمارے پاس ویڈیوز موجود ہیں، ہمارے ساتھ زیادتی ہوئی ہے۔
عدالت نے کہا کہ اس پرکیاکہیں گےکہ اگر ہم اس آپریشن کو ابھی وقتی طورپرروک دیں کیونکہ اسلام آباد میں بھی درخواست ہے، اس پر آئی جی نے جواب دیا کہ سر ہم نے بندے پکڑنے ہیں جنہوں نے املاک کو نقصان پہنچایا۔
جسٹس طارق سلیم نے کہا کہ شہر میں امن چاہیے، پی ایس ایل بھی ہورہا ہے، آپ ابھی اپنا آپریشن روک دیں۔
بعد ازاں لاہور ہائیکورٹ نے عمران خان کی گرفتاری کے لیے جاری آپریشن صبح 10 بجے تک روکنے کا حکم دیتے ہوئے پولیس کو مال کینال پل، دھرمپورہ پل اورٹھنڈی سڑک پر 500 میٹر پیچھے رہنے کی اجازت دی ہے۔

نیوز پاکستان

Exclusive Information 24/7