You are currently viewing عدت میں نکاح کا کیس خارج کرنے کے لیے بشریٰ کا عدالت سے رجوع

عدت میں نکاح کا کیس خارج کرنے کے لیے بشریٰ کا عدالت سے رجوع

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) بانی پی ٹی آئی عمران خان کی اہلیہ بشریٰ بی بی نے عدت میں نکاح کا کیس خارج کرنےکے لیے اسلام آباد ہائیکورٹ سے رجوع کرلیا۔
بشریٰ بی بی نے بیرسٹر سلمان اکرم راجہ کے ذریعے اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر کردی۔
درخواست میں کہا گیا ہےکہ عدت میں نکاح کا کیس نہیں بنتا، ٹرائل کورٹ کا بھی کیس سننے کا دائرہ اختیار نہیں۔
درخواست میں کہا گیا کہ سابق شوہر خاور مانیکا نے مذموم مقاصد کے لیے بدنیتی کے تحت شکایت درج کرائی، جھوٹے اور من گھڑت دستاویزات کی بنیاد پر عدت میں نکاح کا جھوٹا الزام لگایا گیا، سابق شوہر کے مطابق اس نے مجھے 14نومبر2017 کو طلاق دی، خاور مانیکا نے 15 اپریل 2017 کو تین مرتبہ زبانی طلاق دی تھی جبکہ اگست 2017 میں اپنی والدہ کےگھر منتقل ہوئی، یکم جنوری 2018 کو بانی پی ٹی آئی سے شادی تک والدہ کے گھر قیام کیا۔
بشریٰ بی بی نے درخواست میں استدعا کی ہے کہ ایڈیشنل سیشن جج ایسٹ کا 11 جنوری کا حکم کالعدم قرار دیا جائے، عدت کے دوران نکاح کے کیس کو خارج کرنے کا حکم دیا جائے اور درخواست پر فیصلے تک ٹرائل کورٹ کی کارروائی روکی جائے۔

Staff Reporter

Rehmat Murad, holds Masters degree in Literature from University of Karachi. He is working as a journalist since 2016 covering national/international politics and crime.