You are currently viewing سیکٹروں عمارتیں خلاف قانون تعمیر، عدالت میں کے ایم سی کی رپورٹ جمع

سیکٹروں عمارتیں خلاف قانون تعمیر، عدالت میں کے ایم سی کی رپورٹ جمع

کراچی (نیوز ڈیسک) کراچی میونسپل کارپوریشن نے سندھ ہائیکورٹ میں 200 سے زائد عمارتوں کے معائنے سے متعلق رپورٹ جمع کروا دی۔
سندھ ہائیکورٹ میں کثیر المنزلہ عمارتوں میں آگ لگنے کے واقعات سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی اس دوران کے ایم سی نے عمارتوں کے معائنے سے متعلق رپورٹ جمع کرا دی۔
کے ایم سی کی رپورٹ کے مطابق آئی آئی چندریگر روڈ، خالد بن ولید روڈ اور شارع فیصل پر 200 سے زائد عمارتوں کا معائنہ کیا گیا۔
رپورٹ کے مطابق مذکورہ 200 سے زائد کثیرالمنزلہ عمارتوں کی تعمیر ناقص مٹیریل اور بغیر منصوبہ بندی کی گئی۔
رپورٹ میں بتایاگیا کہ عمارتوں میں فائر فائٹرز سسٹم، ہنگامی اخراج کے دروازے ودیگر انتظامات نہیں، ان عمارتوں کو این او سی جاری کرتے وقت کے ایم سی سے بھی رائے نہیں لی گئی۔
رپورٹ میں کہا گیا کہ جائزہ لیے بغیر ان عمارتوں کو مکمل ہونے کے سرٹیفکیٹ جاری کیے گئے۔
غیر قانونی تعمیرات اور این او سی دینے والوں کے خلاف کارروائی ضروری ہے۔
رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ اینٹی کرپشن نے ملوث ایس بی سی اے افسران اور بلڈرز کے خلاف کارروائی شروع کردی ہے۔

Staff Reporter

Rehmat Murad, holds Masters degree in Literature from University of Karachi. He is working as a journalist since 2016 covering national/international politics and crime.