You are currently viewing رضوانہ تشدد کیس میں گرفتار سومیہ عاصم جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل

رضوانہ تشدد کیس میں گرفتار سومیہ عاصم جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل

اسلام آباد (ڈیسک) گھریلو ملازمہ کم سن رضوانہ پر تشدد کیس میں گرفتار سول جج کی اہلیہ سومیہ عاصم جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل کر دی گئی۔
عدالت نے سومیہ عاصم کی جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد کرتے ہوئے جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔
کیس کی سماعت کے موقع پر گزشتہ روز گرفتار ہونے والی سول جج کی اہلیہ کو ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹس میں پیش کیا گیا، جوڈیشل مجسٹریٹ شائستہ کنڈی کی عدالت میں ملزمہ کو پیش کیاگیا۔
اس موقع پر تفتیشی افسر نے جج کو بتایا کہ سومیہ عاصم سے تفتیش کرنی ہے، کل ہی ضمانت خارج ہوئی ہےجسمانی ریمانڈ مطلوب ہے۔
جج کے حکم پر ملزمہ سومیہ عاصم روسٹرم پر آگئی اور کہا کہ میں ہر طرح کی تفتیش میں شامل ہونے کے لیے تیارہوں، مجھے رات کو شامل تفتیش کیاگیا، میں تین بچوں کی ماں ہوں، مجھ سے اچھا سلوک نہیں کیا جارہا۔
سومیہ عاصم نے کہا کہ مجھ سےغلطی ہوئی، جب وہ مٹی کھاتی تھی تو اسے بھیج دینا چاہیے تھا، میں نے تمام دستاویزات مہیا کی ہیں، کچھ نہیں چھپاؤں گی، میرا جتنا میڈیا ٹرائل ہوا ہے، مجھے خود کشی کرلینی چاہیے۔
جج شائستہ کنڈی نے پولیس کی جانب سے سومیہ عاصم کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا پر محفوظ فیصلہ سناتے ہوئےانہیں 22اگست کو دوبارہ پیش کرنے کاحکم دے دیا۔