You are currently viewing خاور مانیکا تشدد کیس: پی ٹی آئی وکلاء کی عبوری ضمانت میں 2 روز کی توسیع

خاور مانیکا تشدد کیس: پی ٹی آئی وکلاء کی عبوری ضمانت میں 2 روز کی توسیع

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) انسداد دہشت گری عدالت نے خاور مانیکا تشدد کیس میں پی ٹی آئی کے وکلاء کی عبوری ضمانت میں توسیع کردی۔
انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج طاہر عباس سپرا نے پی ٹی آئی کے وکلاء کی درخواستوں پر سماعت کرتے ہوئے عبوری ضمانتوں میں 15 جون تک توسیع کر دی۔
دوران سماعت مقدمے میں نامزد عثمان ریاض گل ایڈووکیٹ اور پی ٹی آئی کے دیگر وکلاء عدالت میں پیش ہوئے۔
عثمان گل کے وکیل عادل عزیز قاضی نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ جو بندہ کمرہ عدالت میں موجود تھا اس کا رول الگ ہے اور جو باہر تھا اس کا الگ ہے، صرف ایک شخص کمرہ عدالت کے باہر ہے، ویڈیو موجود ہے۔
عدالت نے استفسار کیا کہ آپ کا کہنا ہے کہ صرف ایک بندہ تھا اور وہ بھی خالی ہاتھ تھا؟
سلمان صفدر نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ کیا پتہ تھا کہ وکالت کرتے کرتے اپنی ضمانتیں کرانی پڑیں گی، عثمان گل ہمیشہ سے احسن طریقے سے اپنے فرائض سر انجام دیتے رہے، ہمارے وکلاء نے ہمیشہ عدالت کے ڈیکورم کا خیال رکھا بہت کچھ برداشت کیا۔
جج طاہر عباس سپرا نے استفسار کیا کہ فتح اللہ کون ہے جو الجھا تھا؟ اگر تفتیشی افسر نالائق ہو اور پورا سال ثبوت اکٹھے نہ کرسکے تو کیا میں التواء دیتا رہوں گا؟
بعدازاں عدالت نے کیس کی سماعت 15 جون تک ملتوی کر دی۔

Staff Reporter

Rehmat Murad, holds Masters degree in Literature from University of Karachi. He is working as a journalist since 2016 covering national/international politics and crime.