You are currently viewing جرگوں کا انعقاد ریاست کے اندر ریاست اور سزائیں غیر قانونی ہیں، سندھ ہائیکورٹ

جرگوں کا انعقاد ریاست کے اندر ریاست اور سزائیں غیر قانونی ہیں، سندھ ہائیکورٹ

کراچی (ڈیسک) سندھ ہائیکورٹ نے بالائی سندھ میں جرگوں کے انعقاد کو غیر قانونی قرار دیتے ہوئے 5 سال کے دوران ہونے والے جرگوں کی تفصیلات طلب کرلیں۔
جیکب آباد میں ہونے والے جرگے سے متعلق کیس کی سماعت سندھ ہائیکورٹ میں ہوئی۔
عدالت نے ریمارکس دیئے کہ کسی بھی ضلع میں جرگہ ہوا تو متعلقہ ذمہ دار پولیس افسر کے خلاف کارروائی ہو گی اور پولیس افسر کا نام ملزمان کی فہرست میں شامل کرکے کیس چلایا جائے گا۔
عدالت نے آئی جی سندھ سے 5 سال کے دوران ہونے والے تمام جرگوں کی تفصیلات طلب کرتے ہوئے حکم دیا کہ اگر کسی ضلع میں جرگہ ہوا تو آئی جی اس ضلع کے ایس ایس پی اور ایس ایچ اوکے خلاف کارروائی کریں، آئی جی جرگوں پر پابندی کے عدالتی احکامات پر عمل کرائیں۔
عدالت نے ریمارکس میں مزید کہا کہ جرگے کا انعقاد ریاست کے اندر ریاست ہے اور جرگے میں سنائی گئی سزائیں بھی غیر قانونی ہیں۔
سندھ ہائیکورٹ نے آئی جی پولیس کو صوبے کے تمام تفتیشی افسران کو ایک ماہ کا ڈیجیٹل فارنزک کورس کرانے کا حکم دیتے ہوئے کیس کی سماعت 17 مئی تک ملتوی کر دی۔

نیوز پاکستان

Exclusive Information 24/7