You are currently viewing بہو عائشہ سالگرہ کی دعوت کا بتا کر گئی، پھر کیا ہوا معلوم نہیں، ساس

بہو عائشہ سالگرہ کی دعوت کا بتا کر گئی، پھر کیا ہوا معلوم نہیں، ساس

کراچی (ڈیسک) کراچی کے جناح اسپتال میں مردہ حالت میں لائی گئی لڑکی عائشہ کی ساس نے بتایا ہے کہ بہو سالگرہ کی دعوت کا بتا کر گئی، اس کے بعد کیا ہوا کچھ معلوم نہیں۔
لڑکی کی ساس نے مزید بتایا کہ وڈیو میں نظر آنے والے مرد و خاتون کو نہیں جانتی، خاتون کا کہنا تھا کہ عائشہ کی میرے بیٹے سے دو سال قبل شادی ہوئی، عائشہ رحیم یار خان کی رہنے والی تھی جب کہ میرا بیٹا پیشے کے اعتبار سے ڈرائیور اور نشہ کرتا ہے۔
عائشہ کی ساس نے تاحال پولیس سے رابطہ کیا نہ ہی ایف آئی آر درج کرائی ۔
جناح اسپتال میں لڑکی کی لاش چھوڑ کر فرار ہو جانے والے مرد اور عورت کوپولیس تاحال تلاش نہیں کر سکی، سی سی ٹی وی کیمروں کی واضح فوٹیجز کےباجود ملزمان کو گرفتار نہ کیا جا سکناپولیس کی کارکردگی پرسوالیہ نشان ہے۔
ابتدائی تفتیش میں پولیس کا کہنا ہے کہ جس شخص نے گاڑی کرائے پرلی ممکنہ طورپر وہی شخص لڑکی کی لاش اسپتال چھوڑ کر گیا۔
لڑکی کی لاش اسپتال چھوڑ کر فرار ہونے والے مرد اور خاتون کو تلاش کر رہےہیں۔
پولیس کے مطابق گلستان جوہر کا رہائشی جمن لڑکی کوچند ماہ سے پارٹیوں میں بھیجا کرتا تھا، جس کی تلاش بھی جاری ہے، دوسری جانب جس بنگلے میں پارٹی ہوئی اس کے مالک نے 7 سال قبل گھر کرائے پر دیا تھا۔
واقعے کی ایف آئی آر تاحال نہیں کاٹی جا سکی ہے، پولیس کا کہنا ہے کہ عائشہ کے گھر والوں کے کراچی پہنچنے کے بعد قانونی کارروائی کی جائے گی۔