You are currently viewing اے ٹی سی خصوصی عدالت نے پی ٹی آئی رہنمائوں کی عبوری ضمانتوں میں توسیع کر دی

اے ٹی سی خصوصی عدالت نے پی ٹی آئی رہنمائوں کی عبوری ضمانتوں میں توسیع کر دی

لاہور (ڈیسک) لاہور کی انسدادِ دہشت گردی کی خصوصی عدالت نے پی ٹی آئی رہنمائوں کی عبوری ضمانتوں میں توسیع کر دی۔
عدالت نے 9مئی کو جناح ہائوس اورعسکری ٹاور حملہ اور ماڈل ٹائون میں مسلم لیگ ن کا آفس جلانے کے الزام میں درج مقدمات میں تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی بہنوں علیمہ خان اور عظمیٰ خان سمیت پی ٹی آئی کے سابق سیکرٹری جنرل و سابق وفاقی وزیر اسد عمر کی عبوری ضمانتوں میں 31اکتوبر تک توسیع کرتے ہوئے آئندہ سماعت تک تفتیشی افسر کو مقدمات کا ریکارڈ پیش کرنے کی مہلت دے دی۔
انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت کی ایڈمن جج ابہر گل خان نے کیس کی سماعت کی۔
سوموارکو سماعت پر اپنی عبوری ضمانتوں کی میعاد ختم ہونے پر ملزمان پیش ہوئے اور اپنی حاضری لگائی۔
دوران سماعت اسد عمر کے وکیل نے عدالت میں کہا کہ ہم شامل تفتیش ہو چکے ہیں بتایا جائے کہ ہمارے شامل تفتیش ہونے کے بعد پولیس تفتیشی حکام نے کیا کیا۔
عدالتی استفسار پر سرکاری وکیل نے عدالت کو آگاہ کیا کہ تفتیشی افسر کو دل کا دورہ پڑا ہے،ریکارڈ پیش نہیں کر سکتے ،استدعا ہے کہ مہلت دی جائے اس پر اسد عمر کے وکیل نے کہا کہ یہ لوگ سب کو ہی ہارٹ اٹیک کروا رہے ہیں، ان پر لازم کریں اگلی تاریخ پر ریکارڈ ضرور پیش کیا جائے۔
عدالت نے اسد عمر اور عمران خان کی ہمشیرہ علیمہ خان کی عبوری ضمانتوں میں توسیع کرتے ہوئے سماعت 31اکتوبر تک ملتوی کر دی۔
عدالت نے آئندہ سماعت تک مقدمات کا ریکارڈ پیش کرنے کا حکم دے دیا۔
ملزمان کے خلاف پولیس تھانہ سرور روڈ ، تھانہ گلبرگ میں جلائوگھیرائو سمیت مختلف الزامات کے تحت مقدمات درج ہیں ۔