You are currently viewing اسرائیل فلسطین تنازعہ کا نتیجہ کیا نکلے گا کہنا مشکل ہے، امریکا

اسرائیل فلسطین تنازعہ کا نتیجہ کیا نکلے گا کہنا مشکل ہے، امریکا

واشنگٹن (نیوز ڈیسک) امریکا نے کہا ہے کہ کسی فلسطینی کو غزہ سے بے دخل نہ کیا جائے، جنگ کے اختتام پر فلسطینی ریاست کا قیام دیکھنا چاہتے ہیں۔
ترجمان امریکی محکمہ خارجہ کا کہنا ہے کہ جنگ کے اختتام پر فلسطینی ریاست کا قیام دیکھنا چاہتے ہیں، وضع اصول کے تحت غزہ علاقے میں کمی نہیں ہونی چاہیے، کسی فلسطینی کو غزہ سے بے دخل نہ کیا جائے۔
انھوں نے کہا کہ ایسی فلسطینی ریاست جو مغربی کنارے اور غزہ کو متحد کرے، یہ وہ پالیسی ہے جو امریکا سپورٹ کرتا ہے اور حاصل کرنا چاہتا ہے۔
ترجمان امریکی محکمہ خارجہ نے پریس بریفنگ میں کہا کہ کوشش ہے کہ غزہ میں کم سے کم جانی نقصان ہو، زیادہ انسانی امداد پہنچائی جاسکے۔
انھوں نے کہا کہ تنازعہ کا نتیجہ کیا نکلے گا کہنا مشکل ہے، جنگ کے اختتام پر فلسطینی ریاست کا قیام دیکھنا چاہتے ہیں۔
علاوہ ازیں یمن کے حوثیوں کی جانب سے بحری جہاز کے اغوا پر امریکی محکمہ خارجہ نے ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ جہاز ضبط کرنا بین الاقوامی قانون کی خلاف ورزی ہے، جہاز اور اس کے عملے کی فوری رہائی کا مطالبہ کرتے ہیں۔
امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے کہا کہ اگلے اقدامات کے لیے اتحادیوں اور اقوام متحدہ سے مشاورت کریں گے۔
یاد رہے کہ اتوار کو یمن کے حوثیوں نے بحیرہ احمر میں اسرائیلی تاجر کا بحری جہاز اغوا کرلیا تھا۔
اسرائیلی میڈیا کے مطابق ترکیے سے بھارت جانے والے جہاز پر عملے کے 52 افراد موجود ہیں، برطانوی کمپنی کا رجسٹرجہاز اسرائیلی ٹائیکون کی جزوی ملکیت ہے۔

نیوز پاکستان

Exclusive Information 24/7