You are currently viewing آئی ایم ایف: پاکستان سے 4100 ارب روپے کا گردشی قرض خاتمے کا پلان طلب

آئی ایم ایف: پاکستان سے 4100 ارب روپے کا گردشی قرض خاتمے کا پلان طلب

اسلام آباد (ڈیسک) عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے حکومت پاکستان سے قرض کی ادائیگی کے لیے بجلی اور گیس پر 4100 ارب روپے کے گردشی قرض کو ختم کرنے کا مینجمنٹ پلان طلب کرلیا ہے۔
ذرائع وزارت خزانہ کے مطابق آئی ایم ایف وفد اور حکومت پاکستان کے حکام کے درمیان نویں جائزہ مذاکرات جاری ہیں اور پاکستان کی جانب سے آئی ایم ایف کو قرض کی ادائیگی کے لیے مختلف تجاویز پیش کی گئی ہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف نے حکومت سے نظرثانی شدہ سرکلر ڈیبٹ مینجمنٹ پلان طلب کرلیا ہے۔ وزارت خزانہ کے ذرائع کے مطابق بجلی شعبے میں گردشی قرض 2500 ارب اور گیس سیکٹر میں 1600 ارب تک پہنچ گیا ہے، آئی ايم ايف کی جانب سے حکومت پاکستان پر نقصانات کم کرنے کے لیے بجلی پر سبسڈی کم کرنے اور ٹیرف بڑھانے کے لیے دباؤ بڑھایا جا رہا ہے۔ ذرائع وزارت خزانہ کا بتانا ہے کہ حکومت کی جانب سے آئی ایم ایف کو بجلی کی قیمت میں 7 سے 10 روپے یونٹ تک اضافے کی تجویز پیش کی گئی ہے تاہم پاکستان کا اسرار ہے کہ بجلی کی قیمت ایک ساتھ نہیں بڑھائی جائے گی بلکہ یہ قیمت اگست تک بڑھائی جائے گی۔ ذرائع کے مطابق حکومت نے 100 یونٹ کے بجائے 300 یونٹ تک سبسڈی کی تجویز دی ہے، پاکستان اور آئی ایم ایف توانائی شعبے سے متعلق اتفاق رائے کے لیے مذاکرات جاری رکھیں گے۔ اس حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ بجلی کی قیمت میں مارچ تک 3 روپے فی یونٹ اضافہ کیا جائے گا، 200 ارب روپے صارفین سے نجلی ٹیرف میں اضافہ کرکے پورے کیے جائیں گے جبکہ رواں مالی سال میں 675 ارب روپے کی سبسڈی ختم کی جائے گی۔

Nimra Jamali

Nimra Jamali is an emerging content writer, who is writing for News Pakistan TV for quite some time now.